بسم اللہ الرحمٰن الرحیم

پیش لفظ

اس دورِ ابتلا میں جبکہ نوجوان طبقہ دین سے نا آشنا ہوگیا ہے اور پھر ستم ظریفی یہ کہ روحانیت کا منکر ، علماء حق کا دشمن اور پیروں فقیروں سے بدظن ہوتا چلاگیا۔یہ قصور ان نوجوانوں کا ہی نہ تھا بلکہ ان کو نہ ہی اکثر علماء میں وہ عمل مل سکا اور نہ ہی اکثر پیروں فقیروں میں وہ روشنی نظر آئی جنکے قصے و کرامتیں یہ کتابوں میں پڑھتے تھے۔ اس پر مستزاد یہ کہ چند ظاہربین علماء اور خالی مشائخ نے بھی ان کرامتوں کو بے بنیاد اور نا ممکن کہ دیا، لیکن حقیقت اس کے برعکس ہے۔ ہر وقت اور ہر دور میں تین سو ساٹھ (360)اولیاء اللہ نہ صرف موجود رہتے ہیں بلکہ خدمتِ انسانی کے لئے ہمہ تن مصروف رہتے ہیں، جن کی وجہ سے دنیا قائم اور پُر رونق ہے، یہ صرف بس ہماری نظر کا قصور ہے۔

اب بھی ہزاروں بندگانِ خدا روحانیت میں موجود ہیں اور ان میں کافی روشن ضمیر بھی ہیں لیکن وہ نسخہ عام دکانوں میں نہیں ملتا ۔ اس بھری دنیا میں اب بھی ذاکرِ قلبی ، ذاکرِ روحی، ذاکرِ سلطانی، ذاکرِ قربانی ہمارے ساتھ روز مرہ کے کاموں میں مگن ہیں لیکن ہمیں کچھ خبر نہیں ، انہیں چیزوں کی شناخت اور اس نسخہ کو عام کرنے کیلئے ہم نے یہ سلسلہ تبلیغی و روحانی شروع کیا ہے۔ اللہ تعالیٰ ہماری مدد و اعانت فرمائے اور ہماری اس سعی کو قبول فرمائے۔   آمین

ضروری اطلاع برائے انٹرنیٹ صارفین

تصانیف کے اس سیکشن کو ان پیج فورمیٹ سے یونی کوڈ فورمیٹ میں منتقل کیا گیا ہے۔ جس کی وجہ سے کچھ الفاظوں میں ٹیکنیکل بنیادوں پر غلطی ہوسکتی ہے، جسکی ادارہ پیشگی معزرت کرتا ہے اور درخواست کرتا ہے کہ کسی بھی الفاظ یا جملہ کی نشاندہی کی جائے تاکہ اس سیکشن کو مزید بہتر کیا جاسکے۔

دینِ الہٰی

خدا کے پوشیدہ راز

روحانی سفر

اس کتاب میں حضرت گوہر شاہی کی آپ بیتی ہے۔

مینارِ نور

اس کتاب میں حضرت صاحب نے فقیری، مرشدکامل اور ذکر کے بارے میں تفصیل سے لکھا ہے۔